241

ٹریفک وارڈن جلاد بن بیٹھا،نوجوان بچیوں اور طالبات کی بس کو تین گھنٹے تک میں چوک پر روکے رکھا،شہریوں کی طرف سے شدید احتجاج

چکوال( نمائندہ بے نقاب)ٹریفک وارڈن جلاد بن بیٹھا،نوجوان بچیوں اور طالبات کی بس کو تین گھنٹے تک میں چوک پر روکے رکھا،شہریوں کی طرف سے شدید احتجاج کیے جانے اور

مین روڈ بند کیے جانے پر بس کو جانے کی اجازت ملی،تفصیلات کے مطابق گذشتہ روز چکوال کے نجی کالج کی بس طالبات کو لیکر مطالعاتی دورے پر لیکر حسن ابدال جا رہی تھی کے ٹیکسلا کے مقام پر واہ فیکٹری کے مین گیٹ کے سامنے چوک پر نزاکت نامی وارڈن نے بس کو روک لیا کہ بس میں گنجائش سے زائد طالبات سوار ہیں ،ڈرائیور کو بس تھانے لیجانے کا کہا گیا جس پر طالبا ت نے شدید احتجاج کیا کہ گاڑی کو تھانے نہیں جانے دیا جائے گاگاڑی میں نوجوان لڑکیاں ہیں ہمیں جانے دیا جائے کیوں کہ بس میں 39سواریوں کی گنجائش ہے جبکہ ہم تعداد میں تینتیس ہیں تاہم نزاکت نامی وارڈن نے طالبات کے احتجاج کو نظر انداز کرتے ہوئے مین روڈ پر کھڑی بس کی چابی نکال لی ،ڈرائیور نے منت سماجت کی اور لڑکیوں نے احتجاج کیا مگر وارڈن ٹس سے مس نہ ہوا اور ایف آئی آر کاٹنے کی دھمکی دی،شور شرابہ کا سن کر مقامی لوگ موقع پر اکٹھے ہوئے او ر وارڈن سے بس کو جانے کی اجازت کا مالبہ کیا نہ ماننے پر میں جی ٹی روڈ بند کر دی جس کے فوری بعد وارڈن نے بس کو جانے کی اجازت دی اور موقع سے غائب ہو گیا،متائثرہ طالبات کے والدین نے وزیر اعلیٰ پنجاب سے ٹریفک وارڈن کی اس کھلی غنڈہ گردی پر فوری اور سخت ایکشن کا مطالبہ کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں