235

محکمہ ہیلتھ چکوال کی نا اہلی، آٹھ ماہ گزرنے کے باوجود 60 لاکھ روپے کی ڈائیلاسز مشین فنگنشل نہ ہو سکی

لاوہ(حفیظ اﷲ ملک)محکمہ ہیلتھ چکوال کی نا اہلی، آٹھ ماہ گزرنے کے باوجود 60 لاکھ روپے کی ڈائیلاسز مشین فنگنشل نہ ہو سکی،عوام سراپاحتجاج۔وزیر اعلیٰ پنجاب اور چیف جسٹس آف پاکستان سے نوٹس لینے کا پرزور مطالبہ۔

تفصیلات کے مطابق نہایت ہی بااعتماد ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ نواحی علاقہ دندہ شاہ بلاول کے ایک سیاسی اور سماجی شخصیت نے سٹی ہسپتال تلہ گنگ کو دو عدد ڈیلاسز مشینیں ڈونیشن کی ہیں تاکہ تلہ گنگ کے غریب عوام مفیید ہوسکیں۔جبکہ ان مشینوں کے فنگشنل ہونے کی صورت میں چار مشینیں مزید بھی عطیہ کرنے کا وعدہ کیا گیا تھا لیکن ادھر محکمہ ہیلتھ چکوال کی سخت نا اہلی سمجھیں کہ آٹھ ماہ کا طویل عرصہ گزرجانے کے باوجود ابھی تک دونوں مشنیں فنگشنل نہ ہوسکیں جبکہ اس مخیر شخصیت نے عوامی حکومت کی اس بے حسی پر مایوس ہوکر مزید مشینیں بھی موخر کر دیں۔اس شدید نا اہلی پر تلہ گنگ اور لاوہ کے عوام سرپا احتجاج بن گئے ہیں اس سلسلہ میں ڈی سی چکوال، خادم اعلٰی پنجاب اور چیف جسٹس آف پاکستان سے فی الفور نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔خبریں کو معلوم ہوا ہے کہ مذکورہ ایک مشین کی قیمت تیس لاکھ روپے بنتی ہے جبکہ دو مشینوں کی مجموعی قیمت ساٹھ لاکھ روپے بنتی ہے۔عوامی حلقوں نے محکمہ ہیلتھ چکوال سے مطالبہ کیا ہے کہ ایک مخیر شخص جوکہ چار مشینیں مزید عطیہ کرنے کا ارادہ رکھتا ہے ادھر گورنمنٹ پنجاب اور محکمہ صحت نے پہلے سے عطیہ کردہ مشینیں بھی فنگنشل نہ کی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں