204

چینجی میں اغواء برائے تاوان،پے درپے قتل،ڈکیتی اور منشیات فروشی جیسے جرائم کے بعد عوامی حلقوں میں گہری تشویش۔

چینجی(امیر احسان اللہ)عوامی حلقوں کا کہنا ہے کہ گزشتہ دو برس سے چینجی میں جرائم کی شرح میں اضافہ ایک لمحہ فکریہ ہے۔ چینجی تحصیل تلہ گنگ کا ایک بڑا تجارتی مرکز ہونے کے علاوہ شرح خواندگی میں بھی نمایاں ہے۔ کچھ عرصہ پہلے یہاں اغواء برائے تاوان کی کوشش کو بھی پولیس نے ناکام بنایا۔ اور کچھ ہی عرصہ قبل تہرے قتل کی قیامت خیز واردات بھی ہوچکی ہے۔ اس کے علاوہ قریبی جنگل میں نڑی پل کے مقام پر ڈکیتی

کی وارداتوں نے بھی ناک میں دم کر رکھا تھا تاہم ڈی پی او چکوال اوراے ایس پی تلہ گنگ اکرام اللہ کی کوششوں سے اب اس مقام پر ایک سب چوکی قائم ہونے کے بعد ڈکیتی کی وارداتوں پر قابو پالیا گیا ہے،سروے کے مطابق اس علاقے میں منشیات فروشوں کے ایک گروہ کا مکروہ دھندا بھی نوجوان نسل کو تباہ کر رہا ہے۔ پولیس اگرچہ چوکس ہو کر اپنے فرائض ادا کر رہی ہے لیکن اس کے باوجود علاقے میں ایسے جرائم کاسد باب ایک لمحہ فکریہ بنا ہوا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں