186

ملک کی معاشی صورتحال خراب ہے ۔گردشی قرضے 970ارب تک پہنچ چکے ہیں ، ادارے ایک دوسرے کے خلاف ہو جائیں تو اس کا نقصان ملک کو ہوگا ۔ محمد اعجاز الحق

تلہ گنگ(نمائندہ بے نقاب) سربراہ پاکستان مسلم لیگ ضیاء محمد اعجاز الحق ایم این اے نے کہا ہے کہ ملک کی معاشی صورتحال خراب ہے ۔گردشی قرضے 970ارب تک پہنچ چکے ہیں ۔اگر یہ قرضے نہ اُتارے گئے تو بجلی کی پیدوار دینے والی کمپنیاں بجلی بنانا بندکر دینگی ۔ جس سے پورے ملک میں سخت بجلی لوڈ شیڈنگ کا سامنا ہو سکتا ہے ۔وہ گزشتہ روز تلہ گنگ ڈیرہ ارائیاں پر صحافیوں سے بات چیت کررہے تھے ۔محمد اعجاز الحق نے کہا کہ

1993میں میں نے نیشنل سیکیورٹی کونسل بنانے کی تجویز اس لئے دی تھی کہ فوج اور حکومت کو بیٹھ کر تمام پالیسیاں ڈسکس کرنی چاہیں ۔میری تجویز پر بعض سیاستدان ناراض ہو گئے تھے ۔اب بھی کہتا ہوں کہ اگر ادارے ایک دوسرے کے خلاف ہو جائیں تو اس کا نقصان ملک کو ہوگا ۔تمام اداروں کو آپس میں کبھی کبھی بیٹھ کر گفتگو کر لینی چاہئے ۔اُنہوں نے کہا کہ حکومت اور فوج میں فارن پالیسی پر اختلافات پیدا ہو جاتے ہیں ۔ کشمیر ،افغانستان وغیرہ کے معاملے پر یہ اختلافات پیدا ہوتے ہیں ۔محمد اعجاز الحق نے کہا کہ بجائے ترجمان سپریم کورٹ اور آئی ایس پی آر کی جانب سے بیانات سامنے آئیں ۔حکومت کو خود سرکاری بیانات جاری کرنے چاہئیں ۔حالیہ سینیٹ الیکشن پر بات چیت کرتے ہوئے اُنہوں نے کہا کہ ہر بار سینیٹر ز الیکشن میں پیسہ چلتا ہے ۔اس بار کونسی سی انہونی ہو گئی ہے ۔ساری زندگی باہر گزار کر بعض لوگ یہاں آکر پیسہ لگاتے ہیں اور سینیٹر بن جاتے ہیں ۔میں تو سمجھتا ہوں کہ اب جو منتخب ہو گیا اور حلف اُٹھا لیا ۔اب اُس پر بات کرنا مناسب نہیں ہے ۔ اب ساری توجہ آمدہ الیکشن پر دینی چاہئے ۔ہماری تو کوشش تھی کہ اس دفعہ بائیو میٹرک سسٹم کے تحت الیکشن ہوں تاکہ کہیں سے بھی 35پنکچر والی بات سامنے نہ آئے ۔لیکن بد قسمتی سے ایسا نہیں ہو سکا ۔مجھے خطرہ ہے کہ اس دفعہ بات شاید 75یا 175پنکچر پر چلی جائے گی ۔قبل ازیں محمد اعجاز الحق نے انجمن ارائیاں کے رہنماء سابق کونسلر چودھری تاج محمد،صحافی محسن قیوم کی پھوپھی اور صحافی راجہ عدیل کے کزن کے انتقال پراُنکے لواحقین سے اظہار تعزیت کی ۔ اس موقع پرایم پی اے سردار ذوالفقار دلہہ ، محمد اسماعیل قریشی ،حاجی ملک ریاض حسین ،چودھری غلام ربانی ،چودھری عامر حسین ،چودھری شیر افضل ،چودھری راشد تاج ،ملک الطاف حسین ، محسن قیوم شیخ ،راجہ عدیل و دیگر شخصیات موجود تھیں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں