216

کریڈٹ کی جنگ ،تلہ گنگ مسلم لیگ’’ ن‘‘ اور مسلم لیگ’’ ق ‘‘مد مقا بل ۔

تلہ گنگ ( نمائندہ بے نقاب)تلہ گنگ آمدہ الیکشن قبل کے مختلف مواضعات کو گیس ،بجلی اور دودسرے منصوبوں کی فراہمی پر ’’ق‘‘ لیگ اور ’’ن‘‘ لیگ کے مقامی سیاسیوں کے درمیان نورا کشتی عروج پر پہنچ گئی ۔ تفصیلات کے مطابق تحصیل تلہ گنگ کے مختلف دیہاتوں کو سوئی گیس بجلی سمیت دوسرے منصوبوں کی فراہمی کا کریڈیٹ لینے

کے لئے ن لیگ اور ق لیگ کے مقامی سیاست دان آمدہ الیکشن سے قبل مدمقابل نظر آنے لگے ہیں۔سیاسی جماعتوں سے تعلق رکھنے والے سیاسی مداریوں اور ان کے حواریوں نے اپنی اپنی قیادت کے حق میں راگ آلاپنا شروع کر دیئے ہیں ۔ جاری منصوبوں کو اپنے اپنے حصے میں ڈالنے کی بھر پور کوششیں کی جارہی ہیں ۔عوامی و سماجی حلقوں نے میڈیا سے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ منتخب حکومتی نمائندے اور اپوزیشن کا تلہ گنگ میں بجلی کی لوڈشیڈنگ ،ناقص سیوریج سسٹم ،ٹوٹی ہو ئی گلیاں وسڑکیں،ناقص واٹر سپلائی پر چپ رہنا عوام کی سمجھ سے بالا تر ہے۔آپس میں لڑائی جھگڑے سے عوام کو بے وقوف بنایا جا رہا ہے ۔تلہ گنگ کے کئی مواضعات کو سوئی گیس اور بجلی کے متعددمنصوبے منظور ہونے کے باوجود پایہ تکمیل تک نہ پہنچ سکے، مزید بات کرتے ہوئے کہا کہ تلہ گنگ کو ضلع کا درجہ اور اقتصادی راہ داری روٹ کے خلاف اسمبلی میں آواز نہ اٹھانا اہلیان تلہ گنگ کے ساتھ دھوکا ہے ۔واضع رہے کہ ریکارڈ کی جانچ پڑتال سے معلوم ہوتا ہے کہ ان میں سے کئی منصوبے سابق ایم این اے سردار فیض ٹمن نے منظور کروائے تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں