302

تلہ گنگ شہر کی حالت قابل رحم، ن لیگ اور ق لیگ کے اختلافات یا مفادات کی جنگ ایم سی تلہ گنگ تباہ حالی کا شکار،ذمہ دار کون؟

تلہ گنگ (اکرم نور چکڑالوی)جگہ جگہ گندی کے ڈھیر ، تالاب بنے روڈ اور گندگی سے اٹے نالے ، تلہ گنگ شہر کی حالت قابل رحم، ن لیگ اور ق لیگ کے اختلافات یا مفادات کی جنگ ایم سی تلہ گنگ تباہ حالی کا شکار ، اس سب کا ذمہ دار کون عوام کا سوال ، تفصیلات کے مطابق میونسپل کمیٹی تلہ گنگ کا علاقہ اس

وقت شدید تباہ حالی کا شکار ہے جہاں پر جگہ جگہ گندگی کے ڈھیر لگے ہوئے ہیں تو نکاسی آب کے لیے بنائے گئے نالے بھی صفائی نہ ہونے کی وجہ سے گندگی سے اٹ چکے ہیں جس کی وجہ سے حبیب بینک کے سامنے کا مین روڈ ہو، ملکوا ل روڈ ہو یا محلہ جھاٹلہ کا روڈ، محلہ ہواپورہ ہو یا فاطمہ جناح روڈ تمام روڈ اکثر ہی تالاب بنے نظر آتے ہیں اورتلہ گنگ شہر کی عوام کو شدیدی مشکلات و پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اس حوالے سے عوام کا کہنا ہے کہ تلہ گنگ شہر کی اس تباہ حالی اور بربادی کا اصل ذمہ دار کون ہے ؟ ن لیگ والوں سے پوچھا جائے تو جواب ملتا ہے کہ ایم سی تلہ گنگ پر حکومت ق لیگ ہے جبکہ ق لیگ سے پوچھا جائے تون لیگ کو ذمہ دار ٹھہرایاجاتا ہے کہ ایم این اے ، ایم پی اے اور چیئرمین ضلع کونسل چکوال ن لیگ کے ہیں اور ن لیگ کی جانب سے ایک سازش کے تحت فنڈ کی عدم فراہمی کا جواب ملتا ہے جس کے بعد اب ہم لوگ سوال کرنے پر مجبور ہیں کہ عوام اب کس کو اس سب کا ذمہ دار ٹھہرائے ؟ن لیگ اور ق لیگ کے اختلافات یا مفادات کی جنگ میں نقصان تلہ گنگ کی عوام اٹھا رہی ہے ،ہر وقت عوام کی خدمت کا دعوی کرنے والے تلہ گنگ کے مقامی سیاست دانوں کو تلہ گنگ کی عوام پر رحم کرتے ہوئے اپنی اپنی سیاست چمکانے کے بجائے مل جل کراپنے شہر کی تعمیر و ترقی میں اپنا کردار ادا کرنا چاہے تھا مگر افسوس مفادات کی سیاست کی وجہ سے ن لیگ اور ق ن لیگ کے درمیان پس تلہ گنگ کی عوام رہی ہے اور اگر یہی حال رہا تو عوام بھی سیاست دانوں سے آئندہ الیکشن میں اس بات کا پورا پورا بدلہ لے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں