303

تلہ گنگ کی عوام کے حقوق پر ڈاکہ ڈالنے والوں کو وائس چئیرمین تلہ گنگ میونسپل کمیٹی کا چیلنج؟ہم بھی کرپشن پر لعنت بھیجتے ہیں، ٹی ایم اے میں موجود فنڈ بھی نکلوا لئے گئے۔ زاہد اعوان

تلہ گنگ (نمائندہ بے نقاب)تلہ گنگ کی عوام کے حقوق پر ڈاکہ ڈالنے والوں کو وائس چئیرمین تلہ گنگ میونسپل کمیٹی ملک زاہد اعوان کا کھلا چیلنج؟جھوٹ بولنے والے میدان جہاں چاہے سجانا چاہیں میں حاظر ہوں وہ پنجاب اسمبلی کے سامنے اکٹھ کرتے ہیں یا چکوال یا تلہ گنگ ٹریفک چوک میں۔ میں اپنی میونسپل کمیٹی کی سچائی عوام کے سامنے بیان کرنے کو تیار ہوں لیکن جھوٹ بول کر عوام کی آنکھوں میں دھول نہیں جھونکی جا سکتی اگر میں جھوٹ بولوں تو میرا سر تن سے جدا کردیا جائے۔ جھوٹے پر اللہ کی لعنت ہو۔تلہ گنگ کی عوام کے لئے مختص

1 کروڑ 22 لاکھ کے ترقیاتی فنڈ مہیا نہیں کئے گئے الٹا کمیٹی کے 5 لاکھ 44 ہزار روپے بھی نکال لئے گئے یہ بات تلہ گنگ ایم سی کے وائس چئیرمین ملک زاہد اعوان نے صفائی اور دیگر معاملات کے متعلق میڈیا میں آنے والی خبروں اور ایم پی اے سردار ذوالفقار دلہہ کی پریس کانفرنس پر اپنا موقف دیتے ہوئے کہی۔انہوں نے کہا کہ ہمارے اوپر انگلی اٹھائی تو جارہی ہے لیکن کسی نے پوچھا کہ آپ ایم سی کے معاملات کیسے چلا رہے ہیں ہم عوام کے منتخب نمائندے تو ہیں لیکن ہمارے فنڈ جب ہمیں نہیں ملیں گیں تو ہم عوام کی کیسے خدمت کرسکیں گیہمیں ایم سی بالکل کھوکھلی دی گئی۔یہ صرف ڈرائنگ روم بن کر رہ گئی ہے۔ جس میں ممبران آکر خالی خالی باتوں سے دل بہلاتی ہیں۔ میونسپل کمیٹی تلہ گنگ کے وائس چئیرمین ملک زاہد اعوان نے مزید کہا کہ جنوری 2017 سے ایک سال چار ماہ ہوگئے ہمیں میونسپل کمیٹی کے انتظامات سنبھالے ہوئے لیکن شہر کے پردھان منتریوں نے ق لیگ کی چئیرمین شپ ملنے پر اپنا انتقام ہمارے فنڈ روک کر رہے ہیں تاکہ یہ تلہ گنگ کی عوام کی خدمت نہ کرسکیں۔ 60 لاکھ روپے جو صرف میونسپل کمیٹیوں کو فراہم کرنے کے احکامات جاری ہوئے جس کے مطابق ہر وارڈ کو 5۔5 لاکھ روپے ملنے تھے لیکن نہیں دئے جارہے جس کا کسی ایم این اے ایم پی اے کا کوئی تعلق نہیں۔جس کے کے لئے نون لیگ کے کسی اچھے بندے سے پوچھا جا سکتا۔ اس کے لئے آج بھی میں ڈی سی چکوال کے پاس گیا ہوا تھا لیکن ہمیں عوام کی خدمت کرنے سے روکنے کے لئے اوچھے ہتھکنڈے استعمال کئے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہا ہم اپنے آپ کو عوام کی عدالت میں پیش کرتے ہیں اور جھوٹوں کو بھی دعوت دیتے ہیں آئیں میدان سجائیں اور قرآن پر حلف اٹھائیں جو جھوٹا ہوگا اس پر اللہ کی لعنت ہوگی۔ میں اپنے لیڈر حافظ عمار یاسر کی خصوصی ہدایت پر عوام کی دن رات خدمت کررہا ہوں لوگوں کے گھروں سے کچرا اٹھوا رہا ہوں گلیاں نالیاں صاف کروا رہا ہوں۔ لیکن ہمیں یہ صلہ دیا جارہا ہے۔ 8 کروڑ کے قریب پیسے ملازمین کی تنخواہ اور پنشن میں لگ رہے ہیں۔ کمیٹی کے ذرائع آمدن صرف جائداد منتقلی نقشہ جات کی فیس، ریڑھی اور ٹھیہ بانوں کی پرچی، سبزی منڈی کی فیس، ہورڈنگز بورڈز وغیرہ ہے۔ جبکہ واٹر سپلائی سالانہ 70 لاکھ خسارے میں جارہی ہے۔ ہمارے اس تھوڑے سے دور میں ایک روپیہ بھی کرپشن ثابت ہو جائے تو ہمیں ٹریفک چوک میں سرعام سزا دی جائے نہ کھا رہے ہیں اور نہ کھانے دے رہے ہیں۔ شہر کا کچرا اٹھا کر ہائی وے آفس کے باہر اکٹھا کیا جاتا ہے جہاں سے اٹھا کر شہر سے باہر ڈمپ کیا جاتا ہے اس کے لئے اب ہم 20 کنال کی اراضی تلاش کررہے ہیں جس کے لئے ایک کمیٹی تشکیل دی گئی ہے جس میں ملک شیر افضل باٹا، ملک غلام احمد، محمد حسین گرداور، عبدالجبار دھولہ، صوبیدار نذر حسین شامل ہیں۔ اس طرح شہر کا تمام کچرا ایک جگہ پر ڈمپ ہوگا۔ انہوں نے کہا ہر شخص چاہے وہ عام آدمی ہو یا چیف منسٹر ہوں وہ آئیں اور کسی بھی وقت چاہے رات ایک بجے بھی ایم سی کا ریکارڈ چیک کرسکتے ہیں یہ سب کے لئے کھلی آفر ہے۔ ایک پیسہ بھی کرپشن ثابت ہوجائے تو ق لیگ کے ممبران کو بے شک سرعام سزا دی جائے۔ اللہ کے فضل سے ہمارا لیڈر خود کرپشن سے پاک ہے اور انشاء اللہ ہم بھی کرپشن پر لعنت بھیجتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اے سی کمروں میں بیٹھ کر تنقید کرنا آسان ہے اگر کسی کو اس شہر کا درد ہے تو اپنی اپنی پارٹیوں سے ہٹ کر آئیں مل کر اس شہر کو روشنیوں اور پھولوں کا شہر بنائیں۔ تنقید کرنے والے ناکام ہو چکے ہیں ان کی ناکامیوں میں اس شہر کے باسیوں سے کئے گئے وعدے جن میں ضلع تلہ گنگ، جدید ہسپتال، سڑکیں، یونیورسٹی، ڈیمز وغیرہ شامل تھے وہ پورے نہیں کئے۔ اپنی ناکامیوں کا نزلہ ایک چھوٹی سی میونسپل کمیٹی پر ڈال رہے ہیں اللہ کی ذات بڑی انصاف والی ہے انشاء اللہ آنے والے الیکشن میں ان کا عوامی احتساب ہوگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں