353

سردار غلام عباس کی حال ہی میں میاں نواز شریف کے منتازع انٹرویو کی وجہ سے مسلم لیگ ن سے علیحدگی،اصل حقائق کیا؟

چکوال(نمائندہ بے نقاب)سابق ضلع ناظم چکوال سردار غلام عباس جنہوں نے حال ہی میں میاں نواز شریف کے منتازع انٹرویو کی وجہ سے مسلم لیگ ن سے علیحدگی اختیار کی ہے ان کی ایک خفیہ مقام پر پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان اور جہانگیر ترین کیساتھ ایک اہم ملاقات ہوئی ہے

جس میں ایک مقتدر شخصیت بھی موجود تھی ، معلوم ہوا ہے کہ یہ ملاقات انتہائی خوشگوار ماحول میں ہوئی البتہ عمران خان نے سردار غلام عباس کی اس تجویز پر کے انہیں ضلع چکوال کی تمام چھ نشستوں پر فری ہینڈ دیا جائے تو وہ تمام چھ نشستوں پر کامیابی کی گارنٹی دیتے ہیں۔ عمران خان نے اس موقع پر بتایا کہ چونکہ گزشتہ 23 سالوں سے ضلع چکوال کے پارٹی کارکن میرے ساتھ ہر مشکل وقت میں کھڑے ہیں لہٰذا ان کو نظر انداز کرنا مشکل ہے۔ دوسری طرف ذمہ دار ذرائع اس ملاقات کی تصدیق نہیں کر رہے ہیں ، راجہ یاسر سرفراز نے بھی ابھی تک اس حوالے سے کسی پیش رفت کی تصدیق نہیں کی۔ سابق ضلع ناظم سردار غلام عباس نے مسلم لیگ ن سے علیحدگی اختیار کی تو ایسا محسوس ہو رہا تھا کہ انکے پاکستان تحریک انصاف اور عمران خان کے ساتھ معاملات طے پا چکے ہیں مگر پاکستان تحریک انصاف کے شمالی ریجن کے سینئر نائب صدر راجہ یاسر سرفراز جن کو عمران خان نے ضلع چکوال کے تمام معاملات کا انچارج مقرر کر رکھا ہے نے اخبار نویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ابھی تک سردار غلام عباس کے ساتھ ہماری کوئی بات نہیں چل رہی۔انفرادی اور ذاتی تعلقات کے حوالے سے پاکستان تحریک انصاف کے کچھ راہنماؤں کے سردار غلام عباس کے ساتھ رابطے ضرور ہو رہے ہیں مگر بنی گالہ سے ابھی تک عمران خان نے اس حوالے سے میرے ساتھ کوئی بات نہیں کی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں