642

سابق رکن اسمبلی سردار فیض ٹمن کی حلقہ NA65میں طویل غیرحاضری کے بعد داخلہ،مسلم لیگ نواز کے علاوہ ہر پارٹی گروپ کے لیے بطور امیدوار قومی اسمبلی پسندیدہ قرار دیے جانے لگے۔

تلہ گنگ (نمائندہ بے نقاب) سابق رکن اسمبلی سردار فیض ٹمن کی حلقہ NA65میں طویل غیرحاضری کے بعد دبنگ داخلہ الیکشن 2018 کے لیے مسلم لیگ نواز کے علاوہ ہر پارٹی گروپ کے لیے بطور امیدوار قومی اسمبلی پسندیدہ قرار دیے جانے لگے. ہفت روزہ پرامن کے ذرائع کے مطابق سابق رکن

اسمبلی سردار فیض ٹمن سے پاکستان تحریک انصاف. پاکستان پیپلز پارٹی سمیت مسلم لیگ ن کی بھی کچھ اہم شخصیات پہ در پہ رابطے کر رہے ہیں جبکہ سردار فیض ٹمن تاحال اپنے حلقہ انتخاب NA65میں حلقہ کے با اثر ووٹ بنک کے حامل شخصیات گروپوں اور دھڑوں اور اپنے دوستوں کے ساتھ تیز ترین رابطے اور طوفانی دوروں پر توجہ مرکوز کیے ہوئے ہیں. ذرائع کے مطابق سردار فیض ٹمن آ ئندہ چند روز میں اپنے ڈیرہ میران شاہ ٹمن میں ایک بڑی افطار پارٹی کا انعقاد کر کے اپنے دوستوں اور سپوٹران کی مشاورت سے پریس کانفرنس میں اپنے آئیندہ کے لائحہ عمل کا اعلان کریں گے. سیاسی تجزیہ نگاروں کے مطابق سردار فیض ٹمن کے بارے عوامی رائے بطور آزاد امیدوار رکن قومی اسمبلی الیکشن میں کامیابی یقینی ہے کیونکہ حکمران جماعت ن لیگ کی قیادت اور پاکستان تحریک انصاف اور ق لیگ کی قیادتوں نے الیکشن 2013 کے بعد حلقہ عوام کو شدید مایوسی کے سوا کچھ نہ دیا ہے اندریں حالات سابق رکن سردار فیض ٹمن اپنے سیاسی ماضی کے حوالہ سے عوام میں انتہائی جرائت مند اور مقبول سیاسی شخصیت کے طور پر جانے جاتے ہیں.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں