773

بابائے سیاست اور سدا بہار ہیرو ملک سلیم اقبال اور ملک شہریار اعوان اپنی صوبائی سیٹ بچانے کے لئے ایک مرتبہ پھر سردار ممتاز ٹمن، ذوالفقار دلہہ اور میجر طاہر اقبال سے قربتیں بڑھانے لگے۔

تلہ گنگ (ِ نمائندہ بے نقاب) سردار غلام عباس کا ن لیگ سے علیحدگی نانا نواسے پر بھاری ہو گیا اور نانا نواسہ سردار ممتاز ٹمن کی جانب اور قربتیں بڑھانے پر مجبور ہو گیا ہے تفصیلات کے مطابق بابائے سیاست اور سدا بہار ہیرو

ملک سلیم اقبال اور انکے نواسے ملک شہریار اعوان اپنی صوبائی سیٹ بچانے کے لئے ایک مرتبہ پھر سردار ممتاز ٹمن زوالفقار دلہہ اور میجر طاہر اقبال سے قربتیں بڑھانے کے لئے سرگرم عمل ہو چکے ہیں کیونکہ جب تک سردار غلام عباس مسلم لیگ ن میں تھے ملک سلیم اقبال اور ایم پی اے ملک شہر یار اعوان ان کے گٹھ جوڑ سے ملک فلک شیر اعوان کو ایم این اے کا ٹکٹ دلانے کا وعدہ کرتے رہے ہیں اور اس کا ثبوت انکے کئی حواری متعدد بار بیان دے چکے ہیں کہ فلک شیر ن لیگ کے قومی اسمبلی کے امیدوار ہوں گے لیکن بازی اچانک پلٹنے سے بابائے سیاست کو بھی اچانک پلٹنا پڑھ گیا اور جن کے خلاف اتحاد تشلیل دے کر انہیں سیاست سے آوٹ کرنا چاھتے تھے انہی کے قربتیں حاصل کرنا پڑھ گئی ہیں واضح رہے کہ بلدیاتی انتخابات میں مسلم لیگ ن کے امیدواروں کے خلاف بابائے سیاست اور ملک شہریار اعوان نے بالٹی کے نشان پر اپنے امیدوار میدان میں اتارے تھے اور سردار ممتاز ٹمن کی زاتی یونیں کونسل میں بھی مداخلت کی تھی اور بالٹی کو شیر کے مقابلے لائے تھے اب جبکہ کوئی راستہ نا بچا تو شہریار اور بابائے سیاست ایک مرتبہ دوبارہ سردار ممتاز ٹمن کی جانب دوستی بھری نظروں سے دیکھنے کی کوشش کررہے ہیں لیکن کیا سردار ممتاز کے قریبی ساتھی انہیں قبول کریں گے کیونکہ ۲۰۱۳ کے الیکشن میں بھی کئے مقامات اور ٹمن میں ملک شہریار کے دست راستوں نے پولیگ والے دن بھی قومی اسمبلی کا ووٹ سردار ممتاز ٹمن کی بجائے پرویزالہی کو دیا تھا اب سردار ممتاز ٹمن اور ملک شہریار ایک دوسرے پر کتنا اعتماد کرتے ہیں اس کا فیصلہ تو پولنگ والے روز ہی ہو سکتا ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں