827

حلقہ NA65،پی ٹی آئی کی سیٹ ایڈجسٹمنٹ یا پھر موجودہ کمزور کھلاڑی میدان میں اتارنے کا فیصلہ،پارٹی کے اندرونی اختلافات کی وجہ سے سردار منصور حیات ٹمن کو ٹکٹ کے حصول میں مشکلات۔

تلہ گنگ (نمائندہ بے نقاب)الیکشن 2018،حلقہ NA65،پاکستان تحریک انصاف کی مسلم لیگ ق سے سیٹ ایڈجسٹمنٹ یا پھر پی ٹی آئی کے موجودہ کمزور کھلاڑی میدان میں اتارنے کا فیصلہ ،عوامی حلقوں میں نئی بحث شروع۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کی طرف سے ٹکٹ کے حصول میں کامیاب ہونے والے افراد کی جاری کردہ لسٹ میں حلقہ NA65کے ٹکٹ کا فیصلہ نہ ہو سکا ،جس پر پارٹی کارکنوں اور عوامی حلقوں میں نئی بحث شروع ہو گئی

،عوامی حلقوں میں جہاں ایک طرف پاکستان تحریک انصاف کی پاکستان مسلم لیگ ق سے سیٹ ایڈجسمنٹ کی باتیں گردش کر رہی ہیں،تودوسری طرف پاکستان تحریک انصاف کی مقامی قیادت کے اندرونی اختلافات کی وجہ سے سردار منصور حیات ٹمن کو NA65 سے پی ٹی آئی کے ٹکٹ کے حصول میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے، حلقہ NA65 پر کئے گئے خصوصی سروے کے دوران عوامی حلقوں کا پاکستان کی بڑی ابھرتی ہوئی سیاسی جماعت پی ٹی آئی کے حوالے سے کہنا تھا کہ پی ٹی آئی کے مقامی رہنماؤں کے اندرونی ختلافات نے حلقہ بھر میں پارٹی کی پوزیشن کو کمزور کیاہے،اپنے اپنے مفادات کی خاطر پارٹی کارکنوں کوہر موقع پر دوحصوں میں تقسیم رکھا گیا،جس کا سب سے بڑا نقصان پارٹی کو پہنچا، عوامی حلقوں کا کہنا تھا کہ پارٹی میں موجود یہی اختلافات ہی سردار منصور حیات ٹمن کے ٹکٹ کے حصول میں ہی مشکلات کا باعث بن رہے ہیں ،عوامی حلقوں کا مزید کہنا تھا کہ NA65مسلم لیگ ن کا گڑھ ہے ،پاکستان تحریک انصاف کی مقامی کھلاڑیوں کی طرف سے بنائی جانے والی پارٹی کی کمزور ساکھ مسلم لیگ ن کے امیدواروں کے سامنے ریت کا ٹیلہ ثابت ہو سکتی ہے ، جس پر پاکستان تحریک انصاف کی اعلی قیادت کو چاہیئے کہ وہ پاکستان مسلم لیگ ق سے سیٹ ایڈ جسمنٹ کر لے کیونکہ65 NAکے موجودہ رہنماؤں کے عوامی رابطوں کے فقدان اور پارٹی ورکروں کی مقامی قیادت سے مایوسی کی وجہ سے پارٹی کی جیت ناممکن ہے،

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں