869

این اے 65 چکوال ٹو مسلم لیگ ن کے سردارممتازخان ٹمن،سردار منصورحیات ٹمن،سردارمحمدفیض ٹمن کی سیاسی الیکشن مہم غیر یقینی صورت حال سے دوچار

تلہ گنگ (محمودعلی شاکر) این اے 65 چکوال ٹو مسلم لیگ نون کے سردارممتازخان ٹمن ،مسلم لیگ ق کے چودھری پرویز الہی،تحریک انصاف کے ٹکٹ سے محروم رہنما امیدواراسمبلی سردار منصورحیات ٹمن ،آزاد امیدوار سردارمحمدفیض ٹمن کی سیاسی الیکشن مہم مستقل صوبائی امیدواران کے بغیر معلق غیر یقینی صورت حال سے دوچار ہوکر ره گئی ہے-

جس کے باعث چاروں بڑے ووٹ بنک کے دعوے دار امیدواران الیکشن سے قبل اپنی اپنی سیاسی بقا اور کامیابی کو یقینی بنانے کے لیئے حلقہ کی عوامی رابطہ مہم سے پہلے سخت مخمصے میں پھنس چکے ہیں-نون لیگ کے سردار ممتازخان کواپنی پارٹی کے صوبائی امیدوار پی پی 23- سردار ذوالفقاردلہہ کی حمایت حاصل ہونے کے باوجود اس حلقہ میں سخت مقابلہ کا سامنآ ہے کیونکہ اسں حلقہ میں پاکستان تحریک انصاف کے سردار آفتاب اکبر سردار ذوالفقار دولہہ کے مدمقابل ہونے کے ساتھ ہی اس حلقہ کا بڑا حصہ ان یونین کونسل کا جہاں سردار ذولفقار دلہہ نے میگا ترقیاتی منصوبے مکمل کروائے- کاٹ کر این اے 64 میں شامل کردئیے گیئے – اس صورت حال میں ن لیگ سمیت ق لیگ کے چودھری پرویز الہی کو بھی تحریک انصاف چکوال ون کے امیدوار سردار غلام عباس خان اورانکے بھتیجے سردارآفتاب اکبر کی محتاجی کا سامنا ہے – این اے65 کے صوبائی حلقہ پی پی چوبیس میں نون لیگ کے سردارممتاز خان کو اپنے صوبائی امیدوار ملک شہریار خان اعوان کے سخت عدم تعاون کاسامنا ہے – اور نون لیگ کے صوبائی امیدوار شہریاراعوان پارٹی کے امیدوار قومی اسمبلی سردار ممتازٹمن کے بھانجے آزاد امیدوارسردار فیض ٹمن کی پشت تھپتپا رہے ہیں ،جسکی وجہ سے نون لیگ کو گھر کے بھیدی لنکا ڈھائے کے مصداق حالات درپیش ہیں – قاف لیگ کے چودھری پرویزالہی نے تحریک انصاف کے ساتھ سیٹ ایڈجسمنٹ کر کے تحریک انصاف کے امیدوار قومی اسمبلی سردارمنصورحیات ٹمن کو سیڈ لائن کروایا تو صوبائی حلقہ چوبیس پراپنے دست راست حافظ عمار یاسر کو نامزدکردیا – جس کے نتیجہ الٹ ہوگیا – تحریک انصاف کے سردار منصورحیات ٹمن کا ذاتی ووٹ بنک اور پارٹی ووٹ بنک اسں فیصلہ کے خلاف سراپا احتجاج بن گیا – جبکہ تحریک انصاف کے صوبائی امیدوار کرنل سلطان سرخرو کو حافظ عمار یاسر کی جگہ لانے کا مطالبہ کر دیا ہے – اندریں حالات چودھری پرویز الہی مکمل تحریک انصاف کے طوفیلی بن چکے ہیں – جبکہ سردار منصورحیات ٹمن ٹکٹ نہ ملنے کے باوجود بغیر صوبائی امیدمواروں کے اور تاحال آذاد امیدوار سردار فیض ٹمن بھی صوبائی امیدواروں کے بغیر الیکشن میلہ لوٹنے کے دعوئے دار نظر آتے ہیں – تجزیہ نگاروں کے مطابق این اے 65 کا الیکشن مجوده وقت معلق اور سخت غیر یقینی نتائج سے دوچار ہے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں