486

سردارممتازخان کاسیاسی کردار،امیدواروں کی کامیابی و ناکامی کے لیئے الارمنگ پوزیشن بن گیا

تلہ گنگ( محمودعلی شاکر) سردارممتازخان کاسیاسی کردار مسلم لیگ ن سمیت ق لیگ ودیگر جماعتی غیر جماعتی امیدواروں کی کامیابی و ناکامی کے لیئے الارمنگ پوزیشن بن گیا۔

ٹکٹ تنازعہ پر ن لیگی قیادت کی طوطا چشمی کا نشانہ بنکر نون لیگ چھوڑنے پر حلقہ بھر میں بزرگ سیاستدان سردارممتازٹمن کوصرف ووٹروں سپوٹروں کی نہیں نون لیگ مخالف قوتوں کی بھی ہمدردی حاصل ہوچکی ھے ۔ نون لیگ سے ناراض سردارممتازخان کو نون لیگ کا سفینہ ڈبو دینے کا حقیقی خطرہ جان کر نون لیگی قیادت نے حمزہ شہباز کو سردارممتاز خان کومنانے کا ٹاسک سونپا ہے۔ جبکہ پی ٹی آئی کی طرف سے جہانگیر ترین ق لیگ کے امیدوار چوھدری پرویزالہی کی طرف سے ق لیگ کےپی پی 24 کے امیدوار صوبائی اسمبلی حافظ عمار یاسر سمیت تحریک لبیک اوردیگر سیاسی جماعتوں کی اھم شخصیات نون لیگ کو ھرانے کے لیئے رابطہ میں ھیں ۔ جبکہ تحریک انصاف کے ٹکٹ سےمحروم امیدوار سردارمنصورحیات ٹمن نے بھی ن لیگ اور ق لیگ مخالف حکمت عملی پر سردارممتازخان سے مشاورتی ٹیلی فونک رابطہ کیاھے۔دوسری طرف مقامی سطع پر پی پی 24 سے برادری اتحاد کے آذاد امیدوار ملک اسد علی خان ڈھیر مونڈ نے بھی سردارممتازخان ٹمن سے مشترکہ لائحہ عمل طے کرلیا ھے۔اندریں حالات سردارممتاز خان آذاد الیکشن لڑ کر بھی اور اپنا سیاسی وزن نون مخالف دھڑا میں ڈال کر بادشاہ گر کا مقام حاصل کرچکے ہیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں