243

پاکستان پیپلز پارٹی ضلع چکوال کے جیالے اپنی قیادت کی ناقص پالیسوں سے نالاں -پارٹی کا امیدوار پی پی بیس پر امیدوار نہ کھڑا کرنے پر ناراض،جنرل سیکرٹری ملک ساجد حسین

تلہ گنگ (تحصیل رپورٹر) پاکستان پیپلز پارٹی ضلع چکوال کے جیالے اپنی قیادت کی ناقص پالیسوں سے نالاں -پارٹی کا امیدوار پی پی بیس پر نہ کھڑا کرنے پر ناراض-پاکستان پیپلز پارٹی یونین کونسل نکہ کہوٹ کے جنرل سیکرٹری ملک ساجد حسین

نے صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے ضلعی قیادت کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے ان کا کہنا تھا کہ 2008کے الیکشن میں پی پی بیس میں پیپلز پارٹی کے سرفراز شاہ جہاں راجہ نے تیس ہزار ووٹ حاصل کیے اور آج وہ ووٹ تقسیم ہو گیا-پی پی بیس میں پاکستان پیپلز پارٹی کا پندرہ ہزار ووٹ چوہدری ناصر منہاس تحریک لیبک دس ہزار تحریک انصاف کے راجہ طارق افضل کالس اور پانچ ہزار میثاق جمہوریت کے حامی جیالوں نے اپنا امیدوار نہ ہونے پر مسلم لیگ ن کے چوہدری حیدر سلطان کو دیا -جس سے پارٹی کا ووٹ بنک دن بدن تقسیم ہو رہا ہے -پی پی 23 میں بھی جیالوں کے ساتھ ضمنی الیکشن میں یہی سلوک کیا گیا اور اپناامیدوار پی ٹی آئی کے حق میں دستبردار کرا لیا اور پھر جیالوں نے پی ٹی آئی کے بجائے میثاق جمہوریت کے تحت ملک شہر یار اعوان کو ووٹ دیا اور عمران کو زرداری کو گالیاں دینے کی وجہ سے ووٹ نہیں دیا بلکہ نواز شریف کے امیدوار ملک شہر یار اعوان کو اہمیت دی کیونکہ میاں نواز شریف نے بی بی شہید کو بہن آخری وقت میں کہا ہے اور بے نظیر بھٹو کی شہادت پر میاں نواز شریف کے آنسو اصلی تھے-جیالے سینٹ الیکشن سے قبل جمہوری حکومت کو ہٹانے کے حق میں بھی نہیں ہیں اور انہوں نے اس سلسلہ میں اپنی قیادت کو آگاہ کر دیا ہے کہ آئین سے ہٹ کر اگر جمہوریت پر حملہ کیا گیا تو ہم میثاق جمہوریت کے تحت ن لیگ کے شانہ بشانہ ہوں گے-

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں