255

ناقص میٹریل کا استعمال محکمہ ہائی وے تلہ گنگ کی کرپشن کا منہ بولتا ثبوت۔ با اثر افراد تجاوزات مافیا گول چوک نہ بننے کی اہم وجہ ہیں۔

تلہ گنگ (نمائندہ بے نقاب)محکمہ ہائی وے تلہ گنگ کی غفلت سے کئی اور قیمتی جانوں کے ضیاع کا خطرہ منڈلانے لگا،عوامی حلقے سراپا احتجاج،با اثر افراد تجاوزات مافیا گول چوک نہ بننے کی اہم وجہ ،عوامی حلقے ۔

تفصیلات کے مطابق ٹہی بائی پاس پر کئی قیمتی جانوں کے ضیاع کے بعدمحکمہ ہائی وے نے خواب غلفت سے بیدار ہو کر بائی پاس کے چاروں اطراف سیمٹی جمپ توبنا دئے ،لیکن محکمہ کی طرف سے بنائے جانے والے یہ سیمٹی جمپ ناقص میٹریل کے استعمال کی وجہ سے کرپشن کی نظر ہو گئے ہیں ،ناقص تارکول اور اینٹوں سے بنے یہ جمپ ایک ماہ کے اندر ہی تباہی کے دہانے پر پہنچ چکے ہیں ۔محکمہ کی طرف سے عوام کے ساتھ چاروں اطراف دو دو جمپوں کے وعدوں کی بھی دھجیاع اڑا دی گئیں، روڈ کے چاروں اطراف بااثر تجاوزات مافیا کا راج ہونے کی وجہ سے گول چوک کا بننا ناممکن ہو چکا ہے ، عوامی و سماجی حلقوں نے کا اعلی حکام سے نوٹس لینے کی اپیل ۔عوامی و سماجی حلقوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے محکمہ ہائی وے تلہ گنگ کے افسران کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا محکمہ ہائی وے کرپٹ افسران واہلکاروں کی وجہ سے تباہ ہو چکا ہے ۔تلہ گنگ کی شاہراہوں پر متعدد خطرناک جگہوں پر سائیں بورڈ ہی نہیں لگائے گئے جس کی وجہ سے آئے روز حادثات کی شرع میں اضافہ ہوا ہے جس کی وجہ سے کئی افراد اپنی قیمتی جانوں سے ہاتھ دھو چکے ہیں ۔مزید بات کرتے ہوئے کہا کہ ٹہی پائی پاس پر بننے والے سیمٹی جمپ بھی ناقص میٹریل کے استعمال کی وجہ سے کرپشن کی نظر ہو گئے ہیں ،ناقص اینٹوں پر تارکول ڈال کر بنائے جانے والے یہ جمپ ایک ماہ کے کم عرصے کے دوران تباہی کے دہانے پر پہنچ چکے ہیں ،مزید بات کرتے ہوئے کہا کہ بائی پاس کے چاروں اطراف بااثر افراد کی پختہ تجاوزات کا راج ہے ،جس کی وجہ انتظامیہ ان کے خلاف کاروائی کرنے سے کتراتی ہے جس سے گول چوک کا بننا ناممکن نظر آتا ہے ۔عوامی و سماجی حلقوں نے اعلی حکام سیط اپیل کی ہے کہ محکمہ میں موجود کرپٹ افسراں و اہلکاراں کا قلع قمع کیا جائے ااور بائی پاس کے اطراف بااثر افراد کی پختہ تجاوزات کو فوری طور پر ختم کر کے گول چوک بنایا جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں