221

موسم سرماکی آمد ڈرائی فروٹ کی قیمتیں آسمان سے باتیں کرنے لگیں۔ موسم سرما کی آمد کے ساتھ ہی ڈرائی فروٹ کی قیمتیں بڑھا دی گئی ہیں


لاوہ(تحصیل رپورٹر)موسم سرماکی آمد ڈرائی فروٹ کی قیمتیں آسمان سے باتیں کرنے لگیں۔ موسم سرما کی آمد کے ساتھ ہی ڈرائی فروٹ کی قیمتیں بڑھا دی گئی ہیں ۔ مونگ پھلی سے چلغوزہ اور پستہ و بادام تک ہر قسم کا خشک میوہ 30سے 40فیصد تک مہنگا کر دیا گیا۔موسم تبدیل ہوتے ہی شہروں ، بازاروں اور مارکیٹوں میں خشک میوہ جات کی دکانیں سج گئیں ہیں۔دکانداروں نے مونگ پھلی، پستہ، بادام، اخروٹ، کاجو، چلغوزہ، انجیر، کشمش اور خشک خوبانی سمیت ڈرائی فروٹ کے سٹالز خوبصورت انداز میں اس طرح سجائے ہیں کہ شہری موسم کی رنگینی سے محظوظ ہونے کے ساتھ خشک میوہ جات خریدنے کے لئے لمحہ بھر رکتے تو ہیں لیکن قیمتوں میں اضافہ انہیں بنا خریداری روانہ ہونے پر مجبور کر دیتا ہے ۔دکانداروں نے رواں سال مونگ پھلی کی قیمت میں اضافے کے ساتھ ساتھ ، پستہ 300روپے اضافہ سے 1600روپے ، کاجو 200روپے اضافہ سے 1600روپے ، اخروٹ 200 روپے اضافہ سے 900 سوروپے ، کشمش 200 روپے اضافہ سے 1000روپے ، خشک خوبانی 400 روپے اضافہ سے 1000 روپے ، چلغوزہ 600 روپے اضافہ سے 3400 روپے فی کلو کر دیا ہے جب کہ مختلف اقسام کی کھجوریں 50 سے 100 روپے فی کلو تک مہنگی کر دی گئی ہیں۔ دکانداروں نے ڈرائی فروٹ کی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ کا ذمہ دار ڈالر کو ٹھہرایا ہے ۔ ان کا کہنا ہے کہ ہم نے یہ مہنگائی نہیں کی ہے ایک تو ڈالر کا ریٹ بڑھ گیا ہے دوسرپیٹرولیم مصنوعات کی وجہ سے کرائے بڑھ گئے ہیں جب کہ بیرون ممالک سے آنے والے ڈرائی فروٹ بارڈر بند ہونے کی وجہ سے مہنگے ہوگئے ہیں۔بہر حال ڈالر کی قیمت میں اضافہ ودیگر مسائل اپنی جگہ ایک حقیقت ہیں لیکن دکانداروں نے گزشتہ سال کی نسبت ڈرائی فروٹ کی قیمت میں کئی گنا اضافہ کر دیا ہے جو عام آدمی کے لیے قابل تشویش ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں