369

تلہ گنگ و لاوہ میں عطائی ڈاکٹروں کی بھرمار،محکمہ کی خاموشی مجرمانہ غفلت

تلہ گنگ (نمائندہ بے نقاب)تلہ گنگ کا تحصیل تلہ گنگ و لاوہ میں عطائی ڈاکٹروں کی بھر مار جو کہ انسانی جانوں سے کھیلنے میں مصروف ہیں۔تفصیلات کے مطابق تحصیل تلہ گنگ و لاوہ کے شہروں اور دیہاتوں کے اندرمیڈیکل سٹور

کی آڑ میں عطائی ڈاکٹروں کادھندہ عروج پر پہنچ چکا ہے۔عطایت کے ہاتھوں کئی مریض اپنی زندگیاں گنوا چکے ہیں۔جبکہ ان میڈیکل سٹوروں کے مالکان نے غیر قانونی پریکٹیشن کے ساتھ ساتھ غیر معیاری ادویات مہنگے داموں بیچ کر غریب عوام کو دونوں ہاتھوں سے لوٹنے میں مصروف ہیں۔محکمہ صحت کے کئی اہلکاراں کے بھی پرائیوٹ میڈیکل پریکٹیشن کام کرنے میں مصروف ہیں۔تحصیل تلہ گنگ ولاوہ کے شہروں اور دیہاتوں میں بیٹھے غیر قانون پریکٹیشن’’کسی‘‘ تھپکی پر کام کرنے میں مصروف ہیں۔جنہوں نے انسانی جانوں سے کھلینے کی ان کو کھلی اجازت دے رکھی ہے۔بے نقاب کا عطائی ڈاکٹروں اور میڈیکل سٹوروں پر غیر قانونی پریکٹیشن پر کئے گئے سروے کے دوران عوامی حلقوں کا کہنا ہے کہ مقامی انتظامیہ اور سیاسی پشت پناہی کی وجہ سے تحصیل تلہ گنگ و لاوہ میں کے شہروں اور دیہاتوں میں عطائی ڈاکٹرانسانوں کی جانوں سے کھیل رہے ہیں اور اب تک کئی انسان اپنی قیمتی زندگیاں گنوا چکے ہیں۔عوامی حلقوں کا مزید کہنا ہے کہ کئی میڈیکل سٹوروں کے مالکان نے غیر قانونی پریکٹیشن کے ساتھ ساتھ غیر معیاری ادویات مہنگے داموں بیچ کر غریب عوام کو دونوں ہاتھوں سے لوٹنے میں مصروف ہیں۔ عوامی حلقوں نے اعلی حکام سے نوٹس لینے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ ان عطائی ڈاکٹروں کے بھیس میں چپے انسانی جانوں سے کھیلنے والوں کے کیخلاف بلا تفریق سخت سے سخت کاروائی عمل میں لائی جائے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں