206

کشمیر کا جہاد رنگ و نسل نہیں نظریے کی جنگ ہے حکمران بهارتی مظالم بند کروانے میں ناکام ہے.. عمار یاسر

تلہ گنگ (نمائندہ بے نقاب)کشمیر کا جہاد رنگ و نسل نہیں نظریے کی جنگ ہے حکمران بهارتی مظالم بند کروانے میں ناکام ہے.. عمار یاسر. حکمران بهارت سے دوستی اور اپنے کاروبار کی خاطر لاکهوں شهدا کے خون سے غداری کر رہے ہیں..جلد مقبوضہ کشمیر میں پاکستان کا پرچم لہرائے گا.

پاکستان مسلم لیگ ق کے مرکزی رہنما حافظ عمار یاسر نے یکجہتی کشمیر کے حوالے سے بیان دیتے ہوئے کہا کہ جلد کشمیر میں آزادی کا سورج طلوع ہونے والا ہے وہ وقت جلد آرہا ہے کہ جب کشمیر میں پاکستان کا جهنڈا لہرائے گا اور ہم کشمیریوں کے ساته مل کر آزادی کا جشن منائیں گئے. انہوں نے کہا کشمیر کا جہاد رنگ ونسل یا روٹی کپڑے کا نہیں بلکہ ایک نظرے کا ہے جسے کوئی شکست نہیں دے سکتا..کشمیر کے حقوق کی جنگ کیلئے حکمرانوں نے آنکهیں بند کر رکهی ہیں انہوں نے کہا اس دن کو منانے کا مقصد حکمرانوں کو خواب غفلت سے جگانا ہے تاکہ وہ سندهی بلوچی پنجابی پختون کے بجائے ایک قوم بن کر مسلہ کشمیر پر غور کریں. یہ جنگ پاکستان کی جنگ ہے جسے پاکستان نے ہی لڑنا ہوگا.کشمیریوں نے لاکهوں جانوں کا نذرانہ پیش کر کے اپنا فرض پورا کردیا ہے اب پاکستان اور اس کے حکمرانوں کشمیریوں کے حقوق کیلئے اقوام متحدہ کا دروازہ کهٹکهٹانا ہوگا.انہوں نے کہا کہ بهارت نے کئی بے گناہ کشمیری نوجوانوں کو جیلوں میں بند کیا ہوا ہے مگر وہ نوجوان اپنے مطالبے سے پیچهے ہٹنے کو تیار نہیں. انہون نے حکمرانوں کی طرف سے سخت مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے حکمران اپنا کاروبار بچانے کیلئے بهارت سے دوستی کیلئے لاکهوں شهدا کے خونوں سے غداری کر رہے ہیں انہوں نے کہا کشمیریوں کے حقوق کے حصول کیلئے ہر پلیٹ فارم پر آواز اٹهانی ہوگی تاکہ وہ لوگ بهی ہمارے ساته جوشی و آزادی کے ساته زندگی بسر کرسکیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں