192

تحفظ ختم نبوت کا کام جنت کے حصول کا آسان ذریعہ ہے،جب تک غیر مشروط طورپر ختم نبوت ایمان نہیں ہوگا اسوقت کوئی بھی فرد مسلمان کہلوانے کا حقدار نہیں۔زبیراحمد اعوان،مولانا عطاء الرحمن قاسمی

تلہ گنگ (نمائندہ بے نقاب)جے یو آئی (ف) نے آزاد کشمیر قانون ساز اسمبلی میں قادیانیوں کو غیر مسلم اقلیت قرار دینے کو امت مسلمہ کی شاندار فتح سے تعبیر کرتے ہوئے تما م اراکین اسمبلی ہدیہ تبریک پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ 7ستمبر کی طرح 6فروری یوم فتح مبین اورعاشقان رسولﷺ کے لیے عظیم الشان کامیابی کا دن ہے۔ان خیالات کااظہار جمعیت علماء اسلام (ف) کے ضلعی امیر قاری زبیراحمد اعوان،مولانا عطاء الرحمن قاسمی،چوہدری عبدالجبار،.

مولانا عبدالسلام ،حافظ عبدالقدیر،حافظ سعید خان،شیخ محمد افضل ،حافظ ادریس ،ڈاکٹر محبوب حسین جراح،سیدعمران بخاری ،محمد انعام اللہ ،مولانا پائندہ خان،مولانا محمد قاسم،مفتی آصف مولانا علی خان،قاری محمدسعید اوردیگر اراکین نے آزاد کشمیر کی قانون ساز اسمبلی میں عقیدہ ختم نبوت کے تحفظ اور لاہوری وقادیانی مرزائیوں کو غیر مسلم اقلیت قرار دیئے جانے کی قرارداد کو بل کی شکل میں منظور کرنے کا پرجوش خیر مقدم کرتے ہوئے حکومت آزاد کشمیر اور اراکین اسمبلی کو مبارکباد پیش کی ہے انہوں نے کہا کہ تحفظ ختم نبوت کا کام جنت کے حصول کا آسان ذریعہ ہے،جب تک غیر مشروط طورپر ختم نبوت ایمان نہیں ہوگا اسوقت کوئی بھی فرد مسلمان کہلوانے کا حقدار نہیں۔عقیدہ ختم نبوت اسلام کا بنیادی عقیدہ اور شریعت محمدی کی اساس اوربنیاد ہے۔ قادیانی ختم نبوت کی انکار کی وجہ سے دائرہ اسلام سے خارج ہیں۔ختم نبوت کا تحفظ در اصل آپ ﷺ کی ذات اقدس کا تحفظ ہے۔ امت مسلمہ نے ہردور میں جھوٹے مدعیان نبوت کابھرپور اندازمیں تعاقب کیا ہے۔ آزاد کشمیر قانون ساز اسمبلی نے قادیانیوں کو غیر مسلم اقلیت قرار دے کر 1973ء کی یاد تازہ کردی ہے۔آزاد کشمیر کی حکومت اور قانون ساز اسمبلی کے اراکین کو مبارکباد پیش کرتے ہیں ،حکومت آزاد کشمیر کے اس اقدام سے پوری امت مسلمہ میں خوشی کی لہر دوڑ گئی ہے ۔جے یو آئی (ف) کے رہنماؤں نے 6فروری منگل کو آزاد کشمیر اسمبلی میں راجہ فاروق حیدر ،علی رضا بخاری اور دیگر اراکین اسمبلی کی جانب سے قادیانیوں کو اقلیت قراردیئے جانے کا بل پیش کرنے اور پھر منظورہونے کو آزاد کشمیر اسمبلی کا تاریخ ساز فیصلہ قراردیا ہے اور اس کو ختم نبوت کی بڑی کامیابی سے تعبیر کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ آزاد کشمیر اسمبلی،سیاسی رہنما اور دینی وقانونی ماہرین نے جو کردار ادا کیا اس پر ہم ان کو ہدیہ تبریک پیش کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ یہ ان سب کے لئے توشہ آخرت اور ذریعہ نجات ہوگا اور روزقیامت جناب نبی کریم ﷺ کی شفاعت نصیب ہوگی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں