281

مسلح افرادسکول وین پردھاوا،پولیس بااثرافراد کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے میں ناکام

گٹال(نمائندہ بے نقاب)سٹی پبلک سکول وین پر مسلح برادر افراد کا دھاوا، ڈرائیور طاہر مسعود سمیت متعدد طلباء زخمی، سکول سٹاف اور اہلیان علاقہ سراپا حتجاج۔دہشت گردی ایکٹ کے تحت ایف آئی آر کاٹی جائے سکول انتظامیہ

۔تھانہ میں دی گئی درخواست کے مطابق مورخہ سات فروری تقریباً تین بجے سٹی پبلک سکول وین ایل پی ٹی 2686 جس پر تقریباً تیس کے قریب سکول کے بچے سوار تھے ۔سکول وین پر نورحسین،اعجاز،اکرم،رئیس ،اشرف،عمران ،نوید،رشید،فتح محمداور نعمان وغیرہ نے لاٹھیوں،کلہاڑیوں،ہاکی وغیرہ سے ملسح ہوکر دھاوا بول دیا اور وین کے ڈرائیور طاہر مسعود کو زدوب کوب کرنے کے ساتھ ساتھ سکول طلباء اور سکول وین پر شدید پتھراؤ اور لاٹھی چارج کیا ۔گاڑی کو بہت زیادہ نقصان پہنچا اور کئی طلباء بھی زخمی ہوگئے جس کی اطلاع فوری طورپر تھانہ لاوہ دی گئی جہاں اے ایس آئی پرویز نے موقع ملاحظہ کیا اور تمام حالات و واقعات کا معائنہ کیا مگر سکول انتظامیہ اور طاہر مسعود نے صحافیوں کو بتایا کہ دو دن گزرنے کے باوجود تاحال ایف آئی آر نہ کاٹی گئی ہے جس پر ویڈیو بیان ریکارڈ کراتے ہوئے ہم اے ایس پی اکرام اﷲ ،ڈی پی او چکوال ،آرپی او رالپنڈی اور وزیر اعلیٰ پنجاب سے پرزور مطالبہ کرتے ہیں کہ ہماری دادرسی فرمائی جائے اور ایف آئی آر کاٹ کر سکول بچوں کو ہراساں کرنے اور علاقہ میں خودف و دہشت پھیلانے پر ملزمان کے خلاف سخت قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں