260

چھٹی سالانہ تحفظ ختم نبوت کانفرنس پچنندکی تیاریاں زوروشور سے جاری ۔

تلہ گنگ (نامہ نگار) چھٹی سالانہ تحفظ ختم نبوت کانفرنس پچنندکی تیاریاں زوروشور سے جاری ۔

تفصیلات کے مطابق چھٹی سالانہ تحفظ ختم نبوت کانفرنس پچنندکی تیاریوں کے سلسلے میں بزم شیخ الہند کا ایک اہم اجلاس مقامی مسجد میں منعقد ہوا جس میں تحصیل لاوہ اور تلہ گنگ کے علماء امیربزم شیخ الہندؒ مولانا نورمحمدآصف ٹمن مولانا عبیدالرحمان انور ،قاری نور محمد ،مفتی اسد محمود،مولانا عبدالرؤف،مفتی نورمحمد،مولانا خالد فاروق جرار،مولانا آصف معاویہ، مولانا علی خان،مولانا محمدمولانا فضل الرحمن ،مولانا سعیدالرحمن ،قاری سعید احمد اکوال،قاری عبدالحئی ،مولانا عبیدالرحمن پیٹرہ فتحال،مولانا حفیظ اللہ ،قاری عبدالرشید،قاری محمد ابوبکر ،مفتی ابوبکر،مولانا رب نواز،مولانا محبوب الٰہی ،قاری معصوم معاویہ،مولانا محمد اسماعیل انگوی،مفتی توقیر،قاری نذیر،قاری فضل محمود کاشف،مولانا مقصود احمد،مولانا عبدالغفور،مولانا یوسف الطاف ،مولانا عبدالرحمن عمر،مولانا رشید،قاری محمد یوسف ،قاری محمد معاویہ،ڈاکٹر شاہنواز،قاری زبیر احمد،خالد مسعود ایڈووکیٹ ،حاجی عبدالکریم،حاجی عبدالروف، مولانا محمد زکریا،مولانا حنیف صابر ،مولانا محمد شریف ،سمیت دیگر علماء کے علاوہ عالمی مجلس ختم نبوت کے ممبران اور عہدیداروں کی کثیر تعداد نے شرکت کی ۔ عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے تلہ گنگ کے امیر و ممبر شوری ٰ مولانا عبیدالرحمان انور نے اس اجلاس کی صدارت کی اس اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کانفرنس میں مولانا اللہ وسایا ،مولانا خلیل احمد ،مولانا عزیز الرحمن ثانی،قاضی مطیع اللہ،شمس الدین سابق قادیانی ،قاسم گجر ،مولانا شبیراحمد عثمانی ،شریک ہونگے،مزید انہوں نے کہا کہ اللہ تعالیٰ کے نبی کی حرمت ﷺ کے لئے ہمیں اپنی جان مال وقت لگانا وقت کی اہم ضرورت ہے ۔لادینی قوتیں اس ملک کی اساس اور حضور ﷺ کی حرمت کے خلاف بھرپور کوششوں میں لگی ہوئیں ہیں کہ کس طرح حضور ﷺ کی محبت مسلمانوں کے دلوں سے نکالی جائے اس ملک کی بقا ء اور نبی آخر الزمان ﷺ کی ناموس کی حفاظت کے لئے ہمیں اپنی صفوں میں اتحاد پیدا کرنا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ اللہ تعالیٰ نے حضور ﷺ کی نسبت کی وجہ سے علماء کو معاشرے میں اعلیٰ مقام عطا کیا ہوا ہے اسمقام کی لاج رکھتے ہوئے ہمیں تحفظ ختم نبوت ﷺ کے لئے اپنا موثر کردار ادا کرنا چاہئے ۔اس اجلاس میں آمدہ کانفرنس کی کامیاب انعقاد کے لئے مختلف امور کا جائزہ لیا گیا اور کانفرنس کے انتظامات کو آخری شکل دی گئی ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں