316

متاثرین بائی پاس کلر کہار نکہ کہوٹ کو دو سال کے بعد بھی معاوضہ نہ مل سکا، فائل کو ٹائر لگوایں تب جا کر کام ہو گا۔ محکمہ ریونیو اور ہائی وے

تلہ گنگ(نمائندہ بے نقاب) متاثرین بائی پاس کلر کہار نکہ کہوٹ کو دو سال کے بعد بھی معاوضہ نہ مل سکا روڈ مکمل ہو چکا ہے لیکن

ابھی تک متاثرین بائی پاس اپنی قیمتی زمینوں کے معاوضے کے انتظار میں ہیں -ملک آصف درویز کی قیادت میں اہلیان نکہ کہوٹ متاثرین بائی پاس نے صحافیوں کو بتایاکہ میرے خاندان کی چھ سو مرلہ زمین بائی پاس میں آئی ہے اور ابھی تک ایک روپیہ بھی حکومت کی طرف سے موصول نہیں ہوا ہے محکمہ ریونیو اور ہائی وے والے کہتے ہیں کہ فائل کو ٹائر لگوایں تب جا کر کام ہو گا مگر ہم نے اپنی زمین کے لیے رشوت کیوں دیں اگر ہمیں ایک ہفتہ کے اندر معاوضہ نہ ملا تو ہم بین الصوبائی روڈ بند کر دیں گے اور اس کی تمام زمہ داری محکمہ ہائی وے اور ریونیو پر ہو گئی-

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں