197

قائداعظم کا پاکستان

محمد تابش اعوان
0301-5002511

اسلام علیکم ! معززقارئین کرام پچھلے دنوں ہونے والے واقعے نے ہر مسلمان کو دہلا کر رکھ دیااور یہ واقعہ زینب کا تھا عوام نے اپنا حق ادا کیا ہڑتالیں کیں ریلیاں نکالیں غم وغصہ کا اظہار کیا مگر حکومت نے کیا کیا جب سر پر پڑی تو کرسی کی فکر میں سب نے بھاگ دوڑ شروع کر دی اور بے چارے کر بھی کیا سکتے ہیں سوائے زینب کے گھر جا کر اس کے ماں باپ سے تعزیت کرنے کے اخباروں اور ٹی وی پہ خبریں چلوا کر اپنی پبلسٹی کروانے کے کیا کر سکتے ہیں وہ تو خود بہت مصروف ہیں وہ تو اپنی ساری توانائیاں ایک دوسرے کے بخیے اودھیڑ نے میں ایک دوسرے کو بے عزت کرنے میں لگا رہے ہیں وہ بے چارے ایک دوسرے سے دھیان ہٹائیں تو ان کے ہاتھ سے کرسی جاتی ہے،وہ تو خود ایک دوسرے کے بنائے جال میں پھنسے ہوئے ہیں وہ کیا عوام کو تحفظ دیں گے اس ملک کی بیٹیوں کی حفاظت کیسے کرے وہ ادھر توجہ دیں تو ہاتھ سے کر سی جاتی ہے قارئیں زرہ غور کریں تو کیا فرق ہے ان درندوں میں جوزینب کے قاتل ہیں اوران چوروں میں جو ملک کو لوٹ رہے ہیں اور اس ملک کے رکھوالے بنے بیٹھے ہیں،یہ ن لیگ کے لیڈر ہوں یا پی ٹی ائی یا پیپلز پارٹی کے سب ایک رسی کے چور ہیں،انہیں کیا کسی کی عزت جائے یا جان یہ تو بس اقتدار کے بھوکے ہیں،کیا یہ وہ ہی پاکستان ہے جس کے لیے انہوں نے بے انتہا قربانیاں دی کیا اس ملک کو کبھی کوئی قائداعظم یا علامہ اقبال نہیں ملے گاجو اس ملک کی ماں بیٹیوں کی حفاظت کر سکیں؟ جو ایک ماں کے اسکی معصوم بچی کو بے دردی سے لوٹی ہوئی لاش پہ جذبات ہیں ان کو سمجھ سکے؟ایک باپ کی بے بسی کو محسوس کر سکنے والا حکمران اس ملک کومل جائے قائداعظم نے جس خاطر یہ ملک بنایا تھا وہ وقت تو پھر لوٹ رہا ہے،وہی درندے پاکستان میں دندناتے پھر رہے ہیں ،وہی ظلم ہر دوسری ماں سہ رہی ہے،کیوں چڑھاتے ہیں یہ لیڈر ان قائد کے مزار پہ پھول کیوں خراج تحسین پیش کرتے ہیں ان کی محنتوں کو مٹی میں ملا کہ یہ چور ڈاکو یہ ہمارے اپنے ہی منتخب کیے ہوئے کیا فرق رہ گیا ہے ان کشمیریوں میں اور ہم میں ان کی عزتیں بھی محفوظ نہیں اور ہماری بھی ان کے جوان گھر سے نکلتے ہیں واپس لاشیں آتی ہیں ہماری بھی یہ ہی حالت ہے قائداعظم کا پاکستان خداوند کریم رحم کرے ہم پہ ہمارے ملک پہ ہمارے بچوں پہ ہمارے بے حس لیڈروں پہ اور ہمیں قائداعظم جیسا ایک حکمران دے دے تاکہ کوئی ماں زینب کی ماں نہ بنیں کوئی باپ زینب کے باپ کی طرح نہ بنے اے پروردگار رحم کر ہم پہ ہمارے ملک پہ پاک کر ان درندوں سے سفاکوں سے اس پاک زمین کو (آمین)۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں